75

یورک ایسڈ زیادتی کے مریضوں کیلئےخوراک

مکمل اجتناب خوراک

خوراک جس میں یورک ایسڈ پیدا کرنے والا مادہ 100 % موجود ھوتا ھے۔ درج ذیل ھیں۔

۔ کلیجی اور جانوروں کے دیگر اعضا

۔ گوشت ھر قسم

۔ پالک

فل کریم دودھ

دودھ کی بالائی

۔ دیسی گھی

۔ زیادہ کریم والا دھی

بناسپتی گھی

۔ٹھنڈے فریج والے مشروبات

نان

میدے یا سفید آٹے کی روٹی

بیکری آئٹمز

۔ دال چنا اور ماش۔

جب ایک ماہ کی مکمل پرھیز سے آپکا لیول ٹھیک ھو جائے تو پھر ہفتے میں کھبی کھبار یہ خوراک کھا سکتے ھیں اس سے کوئی فرق نہیں پڑے گا۔

خوراک جو مادے کو خارج کرتی ھے اور اچھی ھے

 ۔ سادہ  پانی روزانہ 20 گلاس

۔ ابلا ھوا دودھ بلکل بالائی کے بغیر

۔ دھی کا پانی

سبز قہوہ بغیر چینی یا کم مقدار شکر

۔ قہوہ دار چینی

۔ تھوم کا زیادہ استعمال

۔ بادام اور آخروٹ

۔ سبزی  ٹینڈا  کدو شملہ مرچ

۔ سیب کا سرکہ

۔ لیموں کا رس پانی کے ایک گلاس میں نچوڑ کے

فروٹ۔ کیلے سیب۔ چیری۔

۔ دلیہ جو یا گندم   صبع یا عصر کے ٹائم خالی پیٹ۔

۔ مچلھی

انڈے بغیر زردی کے۔۔

۔ چکن ہفتے میں ایک دن استعمال کیا جا سکتا ھے

۔ اچھی کولٹی کی چاکلیٹ

۔کافی

اھم ٹپس

دن کا کھانا چھوڑ دینا بہت کمال اثرات رکھتا ھے کھانا دن میں دو ٹائم کر دینا بہتر ھے یعنی صبح شام۔ پانی کم از کم 20 گلاس وزانہ خصوصا” نہار منہ اور سونے سے قبل ایک گلاس لازمی۔

۔ گرمی سردی دونوں میں ٹھنڈے پانی کے بجائے نارمل پانی پیا جایے

۔ خالی پیٹ صبح شام ورزش یا 3 کلومیٹر واک روزانہ

۔ گندم کا خالص آٹا استمعال کیا جائے

۔ براؤن چاول استمعال کیے جائیں

۔ جو کا دلیہ پانی میں بوائل کر کے بغیر بالائی کے دودھ ملا کر استعمال کرنا

۔ ایک کھانے سے دوسرے کھانے کے درمیان کم از کم 5 گھنٹے کا وقفہ تاکہ جسم اچھی طرح کھانا ھضم کر لے۔

۔ کھانے میں سبزیوں کا زیادہ استعمال

۔ جسمانی طاقت کے لیے زردی کے بغیر ابلے 2 انڈے روزانہ اور بالائی نکلا ھوا دودھ روزانہ استعمال کیا جائے

مفادعامہ کیلے شائع کیا گیا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں