56

آسٹریلین سائنسدانوں کا نئی دوا کے زریعے کوروناوائرس کو 48 گھنٹے میں مارنے کا دعوی

آسٹریلین سائنسدانوں نے دعویٰ کیا ہے کہ اینٹی پیراسیٹک دوا آئیورمیسٹن نے 48 گھنٹے میں کورونا وائرس کو مار دیا  ۔

جریدے جرنل اینٹی وائرل ریسرچ میں شائع تحقیق کےکے مطابق یہ دوا نئے نوول کورونا وائرس کی نقول بنانے کے عمل کو روک دیتی ہے۔ سائنسدانوں کے مطابق یہ دوا پہلے سے ہی زیادہ استعمال ہوتی ہے اور اسے محفوظ دوا سمجھا جاتا ہے، تاہم اسکی مقدار کا تعین کرنا ابھی باقی ہے

دنیا بھر میں سائنسدان دستیاب کئی ادویات کو کووڈ 19 کے خلاف آزما رہے ہیں، جن میں ملیریا کے خلاف استعمال ہونے والی دوا کلوروکوئن، اینٹی وائرل ادویات لوپناویر، ریٹوناویر اور ریمڈیسیویر شامل ہیں، جو ایچ آئی وی اور ایبولا کے علاج کے لیے تیار کی گئی تھیں۔

امریکہ  کے بعد اب فرانس کے ایک ڈاکٹر ڈی ڈائر راولٹ  نے بھی کوروناوائرس  کے علاج میں اپنے تجربات کی روشنی میں  کلوروکئن کو ایزیتھومائسن کے ساتھ ملا کر استعمال کو 75 فیصد  مریضوں پر مؤثر پا یا ہے

چین میں فلو کے لیے استعمال ہونے والی دوا فیویپیراویر بھی ابتدائی ٹرائل میں کووڈ 19 کے خلاف موثر قرار دی گئی تھی، جس پر جاپان میں بھی ٹرائل جاری ہے۔

ان تمام ادویات کے حوالے سے ابتدائی تحقیق کے نتائج حوصلہ افزا ہیں  تاہم ابھی واضح نہیں کہ انہیں کورونا وائرس کے علاج کے لیے کب تک محفوظ اور موثر قرار دیا جاسکتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں