86

وزیر مملکت برائے موسمیاتی تبدیلی زرتاج گل کی بہن ڈائریکٹر نیکٹا تعنیات

 زرتاج گل کی بہن شبنم گل کو قومی ادارہ برائے انسداد دہشت گردی (نیکٹا) کا ڈائریکٹر مقرر کر دیا گیا ۔شبنم گل لاہور کالج برائے خواتین میں گریڈ 18 کی اسسٹنٹ پروفیسر ہیں 

وفاقی وزیر کی بہن کو ڈائریکٹر نیکٹا بنائے جانے کے فیصلے کو سوشل میڈیا پر بھی شدید تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ جبکہ وفاقی وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری کا کہنا یے کہ شبنم گل نے دہشت گردی اور فاٹا پر پی ایچ ڈی کر رکھا ہے اور انہیں انٹرویوز کے بعد منتخب کیا گیا ہے

ترجمان نیکٹا کے مطابق کمیٹی نے میرٹ پران کی تعیناتی کی سفارش کی، شبنم گل گریڈ 19 میں پہلے ہی سے کام کررہی تھیں اس لیے ان کی تقرری بطور ڈائریکٹر خالصتاً میرٹ پر کی گئی۔

ترجمان کے مطابق شبنم گل پی ایچ ڈی اسکالر ہیں اور انسداد دہشت گردی پر کئی مقالے لکھ چکی ہیں، شبنم گل کو نیکٹا کے ریسرچ ونگ کیلئے مناسب اور متعلقہ پایا گیا، نیکٹا نے شبنم گل کی خدمات لینے کیلئے 100 فیصد میرٹ اور مروجہ طریقہ کار کو اختیار کیا۔

وزیرمملکت برائے موسمیاتی تبدیلی زرتاج گل نے اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ ان کی بہن شبنم گل کی نیکٹا میں تعیناتی کسی شفارش کا نتیجہ نہیں۔

زرتاج گل نے کہا کہ شبنم پی ایچ ڈی اسکالر ہیں اور انسداد دہشت گردی پر کئی مقالے لکھے، وہ گریڈ 19 کی آفیسر، بین الاقوامی تعلقات میں ایم فل کرچکی ہیں، شبنم گل کی نیکٹا میں تعیناتی کیلئے انتخاب کی وجہ انسداد دہشتگردی میں اسپیشلائزیشن ہے۔

تاہم سوشل میڈیا کی رپورٹ کے مطابق شبنم گل وزیر نے 2010 میں پولیٹکل سائنس میں پی ایچ ڈی میں داخلہ لیا تھا،لیکن 9 سال گزرنے کے باوجود ان کا پی ایچ ڈی مکمل نہیں ہوسکا۔

ذرائع کے مطابق زرتاج گل کی بہن کو نوازنے کے لئے ہنگامی طور پر نیکٹا کمیٹی کا اجلاس بھی طلب کیا گیا، زرتاج گل نے شبنم گل کو ڈائریکٹر نیکٹا لگوانے کے لئے سیکرٹری داخلہ سے رابطہ کیا، وفاقی سیکرٹری داخلہ اعظم سلیمان سے ٹیلی فونک رابطے کے بعد خط بھی لکھا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں