110

مکہ کلاک ٹاورعجائب گھرحاجیوں کے لیے کھول دیا گیا

مکہ۔ 11مئی(ویب نیوز) مکہ المکرمہ  کی خھاص پیچان حرم کےبالکل سامنے قائم ابراج البيت جسے حرف لگائی گئی ہےعام میں کلاک ٹاور بھی کہا جاتا ہے دنیا کی تہسری بلند ترین عمارت ہے جہاں دنیا کی سب سے بڑی گھڑی سال بھر حاجیوں کی آمد کا سلسلہ رہتا ہے، میں  موجود چار منزلہ عجائب گھر کو عوام کے لئے کھول دیا گیا ہے

۔کلاک ٹاور میں بنایا گیا یہ میوزیم اس سال رمضان میں زائرین کے لیے کھولا دیا گیا ہے، جو پورا مہینہ مسلسل کھلا رہے گا۔عجائب گھر کی پہلی منزل پر نظام شمسی کی مجسم عکاسی کی گئی ہے جس کے بعد وقت کے تعین ،کائنات، کہکشاں کے علاوہ نظام شمسی کی گردش کو بیان کرنے کیلئے بہترین اور جدید ترین طریقوں کے ذریعے وضاحت کی گئی ہے۔اس کے علاوہ زائرین کو دنیا کی سب سے بڑی گھڑی جوکہ مکہ ٹاور پرنصب کی گئی ہے، اس کے مختلف مراحل اور تنصیب کے بارے میں بھی تفصیل سے آگاہ کیاجاتا ہے۔ گھڑی کی تیاری میں دنیا کہ بڑی کمپنیوں کی مشترکہ کاوش ہے۔کلاک ٹاور میوزیم کی دوسری منزل “وقت” کے بارے میں ہے یہاں مختلف ادوار میں گھڑیوں کی ایجاد کے بارے میں وضاحت کی گئی ہے۔کلاک ٹاور کی تیسری منزل پر کائنات کے رازوں کے بارے میں مجسم عکاسی کرتے ہوئے مختلف مناظر کو پیش کیا گیا ہے علاوہ ازیں چاند اور سورج گرہن سے متعلق مختلف ادوار کو بھی دکھایا گیا ہے۔چوتھی منزل پر زائرین کو خلاءاور سیاروں کے بارے میں معلومات مہیا کی گئی ہیں۔

ٹاورکے سب سے بلند مقام کو “شرفہ” کہتے ہیں یہاں پہنچ کر زائرین مکہ کا مشاہدہ کرسکتے ہیں۔ یہاں سے پورا شہر دیکھا جاسکتا ہے جبکہ زائرین حرم کاانتہائی خوبصورت منظر بھی دیکھ سکتے ہیں۔اپنی اونچائی کی وجہ سے کلاک ٹاور مکہ سے 25کلومیٹر دور سے بھی دکھائی دیتا ہے۔کلاک ٹاور میں یہ خصوصیت رکھی گئی ہے کہ اذان کے وقت ایل ای ڈیز جگمگاتی ہیں جن کی روشنی میلوں دور سے دکھائی دیتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں